تازہ ترین

حضرت میاں خلیل احمد شرقپوری نقشبدی مجددی رحمتہ اللہ علیہ کا 6 واں سالانہ عظیم الشان عرس مبارک آج بروز جمعتہ المبارک شرقپور شریف میں احتتام پذیر ہو گیا۔ عرس مبارک میں ملک بھر سے ہزاروں کی تعداد میں زائرین علما مشائخ عظام نے شرکت کی۔ عرس مبارک کا اہتمام سجادہ نشین آستانہ عالیہ شرربانی شرقپور شریف صاحبزادہ حافظ میاں ولید احمد جواد شرقپوری اور صاحبزادہ میاں محمد صالح شرقپوری نے کی۔

آستانہ عالیہ شیرربانی شرقپور شریف میں خوش آمدید


لاھور سے بر راستہ جڑانوالہ، فیصل آباد روڑ پر تقریبا 32 کلو میڑ کے فاصلے پر ایک چھوٹا سا سر سبز و شاداب قصبہ آباد ہے جسے شرقپور شریف کہتے ہیں۔ یہ قصبہ اب ضلع شیخوپورہ کی تحصیل بن چکا ہے۔ شرقپور شریف کی سرزمین اپنے اولیا اور صوفیا کرام کی وجہ سے مشہور ہے۔ ان اولیا کرام میں حضرت میاں شیر محمد المعروف شیرربانی رحمتہ اللہ علیہ بہت مشہور ہیں۔ جو ایک مادر زاد ولی تھے۔ شرقپور شریف کی سر زمین نے بے شمار اولیا کرام، صوفیا کرام، دانشوروں، صحافیوں، شاعروں، سیاست دانوں اور علما کرام اور مشائخ کرام کو جنم دیا ہے۔ جن کی ادبی سربلندی اور علمی سرفرازیوں کے چرچے ان کی جنم نگری کی محدود فضاوں سے ابھر کر لامحدود دنیائے علم وادب کا حصہ ہی نہیں بلکہ علم اودب کا افتخار اور تہذیب کا نگار بن چکے ہیں۔ اس شہر کی دھرتی نے حضرت میاں شیر محمد شیرربانی رحمتہ اللہ علیہ شرقپوری، حضرت میاں غلام اللہ ثانی لا ثانی، حضرت میاں جمیل احمد شرقپوری رحمتہ اللہ علیہ بانی یوم مجدد الف ثانی رحمتہ اللہ علیہ اور بانی یوم صدیق اکبر رضی اللہ تعالی عنہ، کو جنم دیا ہے جنہوں نے یہاں کی فضاوں میں اپنی خوشبو بکھیردی۔

شرقپور کی سرزمین پر فطرت اپنے پورے حسن کے ساتھ مسکراتی نظر آتی ہے۔ فضاوں میں موجود محبت کی خوشبو دامن دل کھینچتی ہے اور امن وسکون نے یہاں کا معاشرہ اپنی آغوش میں لے رکھا ہے۔ یہ شہر اولیا ہے، جلوت کدہ اصفیاہ ہے۔ جس کا گوشہ گوشہ فیضان سے معمور اور بقعہ نور ہے۔ عظمت اس کے ماتھے کا سویرا ہے تو ماحول کو روحانی تجلیات نے گھیرا ہے۔ یہ دھرتی تہذیب کے دامن میں ہے۔ یہ زندہ دلوں کا مسکن اور گہوارہ علم وفن اور روحانیت کا مدفن ہے، تاریخ کے یادگار لمحے اسے سلام کہتے ہوئے گزرتے ہیں

حضرت میاں شیر محمد شیرربانی رحمتہ اللہ علیہ پنجاب کے ان اولیا کرام میں سے ہیں جنہوں نے سلسلہ نقشبندیہ میں بے پناہ شہرت حاصل کی۔ آپ پیدائشی ولی تھے۔ آپ اتباع نبوع ﷺ کی جیتی جاگتی تصویر تھے۔ آپ نے اپنی پوری زندگی اتباع سنت میں گذاری اور اپنے پیروکاروں کی بھی یہی درس دیا کہ زندگی کے ہر فعل میں سنت نبوی کی اتباع کرو۔ آپ جامع علوم ظاہری وباطنی تھے۔ آپ علم، ریاضت، مجاہدہ، زہد، جودوسخا اور بردباری میں بے نظیر تھے۔ گویا کہ آپ اپنے وقت کے قطب الاقطاب اور ولی کامل تھے۔ آپ کی برکت سے کئی مردہ دل نور الہی سے منور ہوئے ہیں اور آج بھی آپ کا ذکر اور نام بڑی عقیدت وارفتگی سے لیا جاتا ہے۔